کوئٹہ میں گیس نے باپ اور اسکے تین بیٹوں کی جان لے لی

کوئٹہ: ڈیجیٹل نیوز اردو(ویب ڈیسک)
وسطی شہر کے علاقے جان محمد روڈ پر کمرے میں گیس لیکج کے باعث تین بیٹےاور باپ دم گھٹنے سے جاں بحق ہوگئے۔
پولیس کے مطابق صوبائی دارالحکومت کے علاقے جان محمد روڈ پر پرچون کی دکان چلانے والے باپ بیٹے قریبی اسکول کے ایک کمرے میں پیر اور منگل کی درمیانی شب سو رہے تھے کہ کمرے میں مبینہ طور پر گیس لیکج ہوئی اور گیس بھرجانے کے باعث نیند میں ہی چاروں کا دم گھٹ گیا اور وہ جاں بحق ہوگئے۔ منگل کی صبح دیر تک دروازہ نہ کھلنے پر باہر سے کمرے کا دروازہ کھولا گیا تو چاروں مردہ حالت میں ملے۔ اطلاع ملنے پر ریسکیو اور پولیس ٹیم پہنچی لاشوں کو سول ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں ان کی شناخت 50 سالہ امان اللہ اور اس کے ،26 سالہ بیٹے حفیظ اللہ ، 22 سالہ محیب اللہ 30 سالہ قاری حبیبِ اللہ کے نام سے ہوئی ہے۔ متوفیان کوئٹہ کے علاقے کلی کمالو کے رہنے والے ہیں۔ متوفی امان اللہ کی بیوہ اور دو چھوٹے بیٹے پسماندگان میں ہیں۔ اہلخانہ کے مطابق گھر دور ہونے کے باعث امان اللہ اور اس کے بیٹے چند راتوں سے شدید سردی کے باعث گھر نہیں آرہے تھے دکان بند کرنے کے بعد وہ قریبی اسکول کے کمرے میں ہی رات گزارتے تھے۔ پیر اور منگل کی شب یہ واقعہ ہوا اور ان کا خاندان اجڑ گیا۔ لاشیں ضروری کارروائی کے بعد ورثا کے حوالے کردی گئیں۔ لاشیں کلی کمالو میں پہنچنے پر کہرام مچ گیا علاقے میں سوگ کا سماں ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں