گوادر بندر گاہ نے سرکاری شعبے کیلئے دو لاکھ ٹن یوریا کھاد کی درآمد شروع ہوگئی

گوادر: ڈیجیٹل نیوز اردو(ویب ڈیسک)
گوادر بندر گاہ نے سرکاری شعبے کیلئے دو لاکھ ٹن یوریا کھاد کی درآمد شروع کر دی یہ 2023 کے آغاز پر ایک اہم پیش رفت ہے جس سے گوادر بندر گاہ کو علاقائی لاجسٹک مرکز کے طور پر خود کو قائم کرنے میں مدد ملے گی
سرکاری اعلامیہ کے مطابق گوادر بندر گاہ نے یوریا کھاد کی پروسیسنگ شروع کی ھے جب الٹرا ایسٹر بازی نامی بلک کیئر کنٹینر شپ گزشتہ روز گوادر پورٹ پر 32000 ٹن یوریا کی کھیپ کے ساتھ لنگر انداز ہوا کل درآمد تین مراحلوں میں مکمل کی جائے گی جبکہ کلئیرنگ سروس فراہم کرنے والے مکران ٹریڈر اور شب کلیئرنگ ایجنٹ دونوں مقامی ہیں جو اس امر کا مظہر ہے کہ گوادر پورٹ مقامی لوگوں کو بڑے پیمانے پر کاروبار اور روزگار کے مواقع فراہم کر رہی ہے جبکہ بندرگاہ میں مزید دو بحری جہاز النگر انداز ہوگئی ہیں ہر ایک جہاز 32ہزارٹن یوریا تجارتی مقاصد کے لئے لیکر آیا ہے جبکہ تینوں بحری جہازوں سے سامان کی ان لوڈنگ کا کام تیزی سے جاری ہے اور ان بحری جہازوں کی آمد سے گوادر میں کاروبار سے منسلک مقامی افراد انتہائی خوش اور مطمئین ہیں گوادر پورٹ ایک گیم چینجر منصوبہ اور سی پیک ملکی ترقی کی روشن مثال ہے جو موجودہ حکومت کی کامیاب پالیسیوں کی عکاسی بھی کرتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں