0

تنخواہوں کی عدم ادائیگی۔ بلوچستان یونیورسٹی میں تدریسی عمل اور دفتری کام بند کردئیے گئے

کوئٹہ :ڈیجیٹل نیوز اردو (ویب رپورٹر)
بلوچستان یونیورسٹی میں تنخواہوں کی عدم فراہمی کے خلاف اساتذہ، آفیسران اور ملازمین کی احتجاجی تحریک کے سلسلے ہڑتال جاری ہے ۔اساتذہ نے تنخواہوں کی فراہمی تک کلاسز کا بائیکاٹ کردیا ہے جبکہ ملازمین نے دفاتر میں کام کرنا بند کردیا ہے جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی جانب سے جامعہ کے مرکزی گیٹ کے سامنے شدید احتجاج کرتے ہوئے تنخواہوں کی جلد فراہمی کا مطالبہ کیا گیا
جامعہ بلوچستان کے اساتذہ، آفیسران اور ملازمین یونینز پر مشتمل جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی احتجاجی تحریک کے سلسلے میں منگل کو تمام شعبوں میں تدریسی عمل کو معطل کیا گیا ملازمین نے دفاتر میں کام کرنا بند کردیا ہے۔ ملازمین نے یونیورسٹی کے اندر ریلی نکالی اور مرکزی گیٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے یونیورسٹی انتظامیہ اور حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی کرتے ہوئے تنخواہوں کی جلد فراہمی اور جامعہ کے مالی مسائل کے مستقل حل کے لئے اقدامات کا مطالبہ کیا ۔ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے رہنماؤں نے احتجاج کے دوران ڈیجیٹل نیوز اردو سے بات چیت کی ہے۔ دیکھنے کے لئے لنک پر کلک کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں